کورونا کے پیشِ نظر سعودی حکومت کا غیرقانونی مقیم تارکین کیلئے احسن اقدام، خوشخبری آگئی

کورونا کے پیشِ نظر سعودی حکومت نے غیرقانونی مقیم تارکین کیلئے احسن اقدام اٹھا لیا ہے
سعودی حکومت نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ کورونا وائرس کے سدباب اور مریضوں کے علاج معالجے کیلئے مملکت میں موجود غیر ملکیوں سمیت تمام شہریوں کو سہولیات فراہم کرتا رہے گا۔

اس سلسلے میں اقوام متحدہ میں متعین سعودی سفیر ڈاکٹر عبدالعزیز الواصل نے کہا ہے کہ سعودی عرب آئندہ بھی مقامی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں اور غیرقانونی مقیم تارکین کو نئے کورونا وائرس ٹیسٹ، علاج اور نگہداشت کی سہولتیں فراہم کرتا رہے گا۔

سعودی خبر رساں ادارے کے مطابق جنیوا میں سعودی سفیر نے بتایا کہ سعودی عرب جی 20 کی صدارت کرتے ہوئے کورونا کی وبا سے نمٹنے کے لیے عالمی اتحاد کی قیادت کر رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سعودی عرب بین الاقوامی معیشت، تجارت اور انسانی صحت پر وبا کے اثرات محدود سے محدود تر کرنے کے لیے عالمی یکجہتی کی پالیسی پر گامزن ہے۔

سعودی سفیر کے مطابق سعودی عرب کورونا وبا سے نمٹنے کے لیے 500 ملین ڈالر کی رقم کی فراہمی کا اعلان کیے ہوئے ہے۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ ہر انسان کو کسی امتیاز کے بغیر جسمانی و ذہنی صحت سے استفادے کا حق حاصل ہے۔

ڈاکٹر عبدالعزیز کا کہنا تھا کہ سعودی عرب وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے حفاظتی اقدامات کیے ہوئے ہے۔ وہ اپنے یہاں تمام شہریوں، مقیم غیرملکیوں اور غیرقانونی طریقے سے رہنے والے تارکین کو بھی مفت صحت سہولتیں مہیا کر رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مملکت نے وبا سے شدید متاثرہ نجی اداروں کے ملازمین کی ساٹھ فیصد تنخواہ سرکاری خزانے سے ادا کی ہے جبکہ وبا کے پیش نظر بہت سے قیدیوں کو رہا کر دیا گیا اور کئی عدالتی فیصلوں پر عمل درآمد معطل کر دیا گیا۔

Post a comment

0 Comments